آپ سے اک بات کہنی ہے ۔۔۔۔

آپ   سے  اک  بات  کہنی    ہے
یہ جدائی ہمیں دائم سہنی ہے

لٹ جائے گی متاعِ جنوں اب کی بہار
اک تری یاد ہے  جو باقی  رہنی  ہے

بہت  خوش  ہیں  میرے  چاہنے   والے
جب سے میں‌نے عبائے رنج پہنی ہے

پرسکوں   تھے   ہجر   کے   دن
وصل میں یہ کیسی بے چینی ہے

کہہ  کر   بھی جو  ان کہی   رہی
پھر وہی بات آج تم سے کہنی ہے

چمن کی طرح ہم پر بھی خزاں آئی ہے
بدل  کر  چولا  ہم  نے اداسی پہنی  ہے

(میری تک بندی ہے :grin: اس کا ثواب یا عذاب میرے کھاتے میں جائے گا )

Comments
15 Comments

15 تبصرے:

انا نے فرمایا ہے۔۔۔

اچھی ہے مجھے تو پسند آئی۔۔۔۔
چوتھا اور پانچواں شعر کی کیا بات ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اب ظاہر ہے ثواب یا عذاب توآپ ہی کے کھاتے میں جائے گا :smile:

کامران اصغر کامی نے فرمایا ہے۔۔۔

شاعرجناب جعفر فیصل آبادی :shock:

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

::انا:: شکریہ۔۔۔ :smile:
::کامی:: نام تو آپ کا کامی ہے کبھی کوئی کام بھی کیا ہے۔۔۔ :razz:

محمد وارث نے فرمایا ہے۔۔۔

آثار اچھے نہیں ہیں اور ہیں بھی جعفر صاحب، اچھے نہیں اس وجہ سے کہ شاعری بھی کوئی کام ہے اور اچھے اس وجہ سے کہ شاعروں والے سارے 'جراثیم' آپ میں پائے جاتے ہیں۔ :grin:

شعیب سیعد شوبی نے فرمایا ہے۔۔۔

بہت خوب۔ آپ نے اپنی شاعری پوسٹ کرنے کی ہمت تو کی۔ مجھ میں تو یہ ہمت بھی مفقود ہے۔ :oops:

ڈفر نے فرمایا ہے۔۔۔

شادی کر لو بچو
نہیں تو یہ غزلیں مرثیوں میں بدل جائیں گی
اور ایک فرق مزید پڑے گا
پڑھنے والوں کا رونا
پھوٹ پھوٹ کر رونے میں بدل جائے گا
مستقبل روشن ہے تمہارا
پر ماضی کچھ اچھا نہیں لگ رہا
فوراً خیر خیریت سے مطلع کرو

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

وارث صاحب۔۔۔ بہت شکریہ۔۔۔ شاعری کو کام بنانے والوں‌نے ہی کام خراب کیا ہوا ہے۔۔۔ :grin:
اگر آپ کہتے ہیں کہ مجھ میں شاعری کے جراثیم ہیں (اور مجھے امید ہے کہ آپ نے مروت میں نہیں‌کہا ہوگا :smile: ) تو یہ میرے لئے ایک سرٹیفکیٹ کے برابر ہے۔۔۔
::شعیب:: آپ نے شاعری کو بہت خوب لکھا کہ اسے پوسٹ کرنے کو۔۔۔ :roll:
:؛ڈفر:: شادی تو خود سو بیماریوں کی ایک بیماری ہے اس سے عشق کی بیماری کو کیا فایدہ ہوگا۔۔۔
الٹا حسیناؤں میں‌ساکھ خراب ہو جائے گی۔۔۔۔ :mrgreen:

محمد وارث نے فرمایا ہے۔۔۔

یہ غزل اسطرح "ترازو" کے وزن میں آ‌جائے گی، یہ اصلاح نہیں ہے برادرم، نہ میں اس قابل اور نہ میرا یہ کام، نہ آپ نے مجھ سے پوچھا لیکن پھر بھی اگر برا نہ لگے اور جان کی امان پاؤں تو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آپ سے ایک بات کہنی ہے
یہ جدائی ہمیشہ سہنی ہے

ہر متاعِ جنوں‌ لٹے گی ضرور
اک تری یاد باقی رہنی ہے

خوش ہیں سب میرے چاہنے والے
غم کی میں نے عبا جو پہنی ہے

اگلے شعر میں قافیہ 'چینی' ٹھیک نہیں، غور کریں، کہنی، سہنی، رہنی پہنی، کے ساتھ 'چینہ' فِٹ نہیں بیٹھ رہا۔

کہہ کے بھی ان کہی رہی جو بات
پھر وہی آج تم سے کہنی ہے

چمنِ دل میں ہے خزاں جعفر
آج کل جو اداسی پہنی ہے

والسلام

عمر احمد بنگش نے فرمایا ہے۔۔۔

پہلی بات، اچھی کاوش ہے :razz:
دوسری بات، بھائی جی، خیر تو ہے ناں‌:mrgreen:

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

::عمر:: شکریہ۔۔۔ خیریت کہاں‌ ہے بھائی۔۔۔ ویسے یار ہر کوئی یہی پوچھ رہا ہے۔۔۔ کیا واقعی زیادہ ہی رونا دھونا ہے اس میں۔۔۔ :grin: :grin:
وارث صاحب۔۔۔ میرے استادوں‌، دوستوں، جاننے والوں کا متفقہ فیصلہ یہ تھا اور ہے کہ میں بے شرم ہوں۔۔۔ لیکن آپ نے مجھے شرمندہ کر ہی دیا۔۔ صاحب ۔۔ آپ کی تو بہت نوازش اور محبت ہے کہ آپ نے اتنا جوکھم کیا۔۔۔ اور اس مبتدی کی اصلاح کی ۔۔ اگر آئندہ بھی کچھ ٹوٹے پھوٹے اشعار پوسٹ کئے تو امید ہے کہ مہربانی فرما کر ان كى بھی مرمت کردیا کریں گے ۔۔ایک بار پھر بہت شکریہ۔۔۔

محمد وارث نے فرمایا ہے۔۔۔

نوازش جعفر صاحب اور یہ برادرم کہ یہ اصلاح واقعی ہی نہیں ہے یہ کام تو اساتذہ کا ہے اور یہ ناچیز اس کا بر خود غلط دعویٰ نہیں کرتا :grin:

میں نے فقط یہ کیا ہے کہ اس کی نوک پلک جو جہاں جہاں وزن سے باہر ہو رہی تھی اس کو وزن میں‌ کر دیا ہے اور یوں کم از کم اب دنیا کا کوئی ناقد یہ نہیں کہہ سکتا کہ یہ شاعری نہیں‌ ہے، ہاں کیسی ہے یہ فیصلہ تو صرف پڑھنے والے ہی کر سکتے ہیں :lol:

کامران اصغر کامی نے فرمایا ہے۔۔۔

:shock: او پاجی چھڈو ۔۔۔۔
کس طرف جا رہے ہیں یہ سب آپ کو خراب کر رہے ہیں یہ بھی کوی کام ہے۔
شاعر تو ویلے ہوتے ہیں
اکسر اکیلے ہوتے ہیں
تھوڑے ٹھرکیلے ہوتے ہیں
شرابی اور چرسیلے ہوتے ہیں
کیا آپ شاعر ہو ؟ :cry:

عمر احمد بنگش نے فرمایا ہے۔۔۔

خیریت کہاں، اور بھی غم ہیں زمانے میں محبت کے سوا، رونا دھونا تو ٹھیک ہے، لیکن میں سوچ رہا تھا کہ آپ کی شاید لاٹری نکل آئی ہے کہ آٹے چاول کے رونے سے فارغ ہو کر یہ کچھ کرتے ہیں :mrgreen:

اور کامی جی گستاخی معاف، یہ زیب نہیں دیتا کہ شاعروں کے بارے ہم ایسا کہیں، شاید ہم انسانوں کے ان احساسات کی ترجمانی کرتے ہیں جن کی میں اور آپ نہیں کر سکتے۔ انا لیکچر سن کے تواڈے تے پتہ نی میرے کن لال ہو گئے نیں :mrgreen:

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

وارث صاحب۔۔۔ شکریہ محترم۔۔۔ :smile:
::کامی:: میں‌ جتنا خراب ہوں اسے سے زیادہ کوئی کیا خراب کرے گا مجھے :mrgreen:
شاعروں کا جہاں تک سوال ہے اور ان کی جو تعریف آپ نے بیان کی ہے۔۔۔ پھر کیا خیال ہے اس شاعر کے بارے میں جس کی نظم آپ اسمبلی میں جھوم جھوم کے گایا کرتے تھے۔۔
لپّے آتی ہے دعا بن کے تمنا میری
ہیں جی۔۔۔۔ :mrgreen:
:؛عمر:: جناب شاعر غم جاناں اور غم روزگار کو ملا کر کاک ٹیل بناتےہیں ایک بھی چیز نہ ہو تو نشہ نہیں ہوتا۔۔۔ :mrgreen:
جیسی میری لاٹری نکلی ہے، دعا ہے کبھی کسی کی نہ نکلے ۔۔۔۔ :shock:

بلوُ نے فرمایا ہے۔۔۔

بہت اچھی ہے

تبصرہ کیجیے