چند اقتباسات - خواتین کے ڈائجسٹوں سے

”۔۔۔۔ جونہی شاقق اندر داخل ہوا، اس کا سامنا فجل سے ہو گیا جو یونیورسٹی جانے کے لئے نکل رہی تھی۔ پکوڑے کلر کے سوٹ پر فالودے رنگ کی چادر میں وہ ایک قیامت لگ رہی تھی۔ شاقق اسے نظر انداز کرنا چاہتا تھا لیکن ایسا مبہوت ہوا کہ فجل کے ابا کے کھنکھارنے پر ہی اسے ہوش آیا۔۔۔۔“
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
”۔۔۔۔ نارم اسے ڈھونڈتا ہوا کچن تک آ پہنچا اور دروازے میں کھڑا ہو کر فرینہ کو محبت پاش نظروں سے دیکھنے لگا۔ وہ اس سے بے خبر بھنڈیوں کے لئے پیاز کاٹ رہی تھی۔ نارم نے اسے ہولے سے پکارا، ”فرنی۔۔۔“ ۔ فرینہ نے پلٹ کر اسے دیکھا تو حیا سے (یا چولہے کی آگ) سے اس کے سانولے گال نارنجی ہوگئے ۔۔۔۔“
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
بائسہ کے فائنل ایگزامز شروع ہونے والے تھے، ایگزامز سے زیادہ وہ اس بات پر پریشان تھی کہ اب اسے کیسے دیکھ سکے گی؟؟ وہ جو اس کی زندگی کا محور ہے، جس کے خیال سے ہی اس کی پلکیں حیا سے جھک جاتی ہیں، جس سے اس نے ٹوٹ کر محبت کی ہے (اور ٹوٹنے کی وجہ سے زنگ بھی لگ گیا ہے ) ، لیکن وہ کٹھور دل ایسا ہے کہ اسے کچھ خبر نہیں‌ کہ کوئی اسے اپنی زندگی بنائے بیٹھا ہے۔
کب پتہ چلے گا تمہیں۔۔۔ لائم۔۔۔ کب اپنی بائسہ کے دل کی بات سنو گے ، سمجھو گے؟؟؟ کب ۔۔۔ کب۔۔۔۔
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
انتباہ:
مندرجہ بالا اقتباسات ان ڈائجسٹوں سے لئے گئے ہیں جو ابھی تک طبع نہیں ہوئے اور نہ ہی ہونے کی امید ہے۔۔۔ لہذا کسی بھی قسم کی مطابقت قطعی اتفاقیہ ہوگی۔۔ ان میں لکھے گئے نام خالص میری اپنی ”ایجاد“ ہیں‌ اور انہیں‌کوئی بھی اپنے ہونے والے بچے کے لئے چن سکتاہے کہ آج کل خواتین زیادہ تر نام ڈائجسٹوں سے ہی چنتی ہیں۔ لیکن بڑے ہونے پر بچوں نے اگر سوال کیا کہ یہ نام کہاں سے پڑھ کر رکھا تھا تو میرا ذمہ توش پوش۔۔۔
Comments
31 Comments

31 تبصرے:

شازل نے فرمایا ہے۔۔۔

شکر ہے آپ نے وضاحت کردی ورنہ میرے تبصرے سے شاید خواتین غش کھا سکتی تھیں۔
ایک بار میں خواتین کا ایک مشہور رسالہ پڑھ رہا تھا تو میرے والد صاحب نے کہا تھا کہ یہ کیا الابلا پڑھ رہے ہو۔

محمد وارث نے فرمایا ہے۔۔۔

ہا ہا ہا، کیا خوبصورت عکاسی کی ہے :lol:

ریحان مرزا نے فرمایا ہے۔۔۔

کیا بات ہے ۔۔ واہ

یہ ہوئی نا پھر اردو کہانی کیا خوب لکھا ہے لکھنے والے نے ۔۔

اور آپ کا یہ نام لکھنے والی بات بھی خوب کہی ہے آپ نے

درویش نے فرمایا ہے۔۔۔

واہ کیا خوب لکھا ہے بھئی۔ واقعی خواتین کے ڈائجسٹ ایسے ہی فضول افسانوں سے بھرے ہوتے ہیں۔ نا سر نہ پیر۔

راشد کامران نے فرمایا ہے۔۔۔

یا چولہے کی آگ کی آگے سے اس کے سانولے گال نارنجی ہوگئے :grin: بہت ہی اعلی۔

نا معلوم کیوں پچھلے دو دن سے میں بھی اسی طرح کے کسی مضمون کے تانے بانے بننے میں لگا ہوا تھا لیکن آپ نے بہت خوبی سے بات پہنچادی۔

ڈفرستان کا ڈفر نے فرمایا ہے۔۔۔

ونڈر فل
میں نے بھی خواتین ڈائجسٹوں کی بہت خاک چھانی ہے :neutral:
ہم تو با جماعت پڑھتے تھے اور سر دھنتے تھے
خواتین مصنفوں کے جب سے انٹرویو آنے لگے اور ان کی شکلیں دیکھیں تو اندازہ ہوا کہ شائد یہ کچھ احاس کمتری کی وجہ سے ہوتا ہے کہ افسانے کے پہلے تین صفحے ہیروئین کے حسن کی تعریف اور نزاکتوں سے کیوں‌بھرے ہوتے ہیں؟

شعیب صفدر نے فرمایا ہے۔۔۔

جناب بہت خوب پیروڈی لکھی آپ نے! قابل داد!
ویسے آپ پڑھتے کیوں تھے خواتین کے ڈائجسٹ؟

shaper نے فرمایا ہے۔۔۔

bohut khooob

کامران اصغر کامی نے فرمایا ہے۔۔۔

خدا کا واسطہ ہے جعفر یہ ڈائجسٹوں کی جان چھوڑ دو اب تو تمھاری آنکھیں کسی دن باہر گر جائیں گی تھوڑ ی سی جگہ رہ گئی ہے ان کے پاس ویسے یہ بیماری کینسر سے کم نہیں ہمارے ایک بھائی صاحب کو بھی ہے کاش کوئی اس پر بھی رسرچ کرے اور علاج دریافت کرے۔لگتا ہے ۔لگتا ہے ڈائجسٹو کی بیماری اس سے پیدا ہوئی ہے۔

افتخار اجمل بھوپال نے فرمایا ہے۔۔۔

میں نے انجنیئرنگ کالج میں تعلیم کے زمانہ ۔ 1962ء سے قبل ۔ لاہور راولپنڈی کے سفر کے دوران ایک آدھ بار اخبارِ خواتیں پڑھا تھا اسلئے کہ کسی سواری نے پڑھنے کو دے دیا تھا ۔ کچھ اسی طرح کے افسانے تھے اس میں ۔ خاص تین عورتیں تین کہانیا پڑھ کر تو دل چاہا تھا کہ رسالہ چھاپنے والے کے سر پر حقے کا پانی ڈال ڈال کر سو جوتیاں ماری جائیں ۔ ایسے واقعات جو کسی صورت ممکن ہو ہی نہیں سکتے تھے

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

:؛شازل:: آپ لکھ دیتے جو بھی آپ کے دل میں تھا۔۔۔ خواتین اکثر غش بھی شوقیہ کھاتی ہیں۔۔۔ :mrgreen:
::‌وارث:: نوازش ۔۔۔ :smile:
:؛ریحان:: خوش آمدید ۔۔ اور پسندیدگی کا شکریہ۔۔ :smile:
::درویش:: جی آیاں نوں۔۔ جناب افسانے نہیں ہوتے وہ۔۔۔ کچھ اور ہی ہوتا ہے جس کی سمجھ ابھی تک نہیں‌ آسکی۔۔۔ :lol:
::راشد کامران:: ارے جناب۔۔ آپ ضرور لکھیں اس پر۔۔۔ مجھے یقین ہے کہ بہت عمدہ ہوگا۔۔۔ یہ تو پھکڑ پن ہے ۔۔ :mrgreen:
::شعیب::‌ شکریہ۔۔۔ سب نے پڑھے ہیں زندگی کے کسی نہ کسی موڑ پر ۔۔۔ :mrgreen: آپ نے بھی پڑھے ہوں گے۔۔۔ :wink:
::Shaper: خوش آمدید ۔۔۔ بہت شکریہ۔۔۔ :smile:

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

::ڈفر:: کدھر غائب ہیں جناب۔۔۔ آپ کا تو اعلان گمشدگی کمپوز کرکے رکھا تھا۔۔ آج نشر کرنے کا ارادہ تھا۔۔۔ :mrgreen:
میں نے بھی بہت پڑھے ہیں لیکن میڑک سے پہلے پہلے ۔۔۔ گھر میں آج بھی پڑھے جاتے ہیں اور مجھے پتہ ہے کہ اس پوسٹ پر کتنا بڑا فساد ہوگا۔۔۔ :mrgreen:
::کامی::‌ او اے کے گل کیتی اوئے۔۔۔ ہنج گل کری دی اے۔۔۔ :mrgreen:

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

افتخار صاحب۔۔۔ اور دوسرا مسئلہ یہ کہ ان کہانی نما بکواسیات کا صرف ایک مسئلہ ہوتا ہے۔۔۔ شادی۔۔۔۔ اس کے علاوہ ان کو دنیا میں کچھ نظر نہیں‌ آتا ۔۔۔۔

شازل نے فرمایا ہے۔۔۔

یار بات یہ ہے کہ مرد تو اپنی دوستیوں کا خوب پرچار کرتا ہے بلکہ فخریہ کرتا ہے
اور اگر خواتین بھی اپنی دوستیوں کا ذکر کر بیٹھیں تو ہم اسے فلرٹ یا کچھ اور کہنے لگتے ہیں
اگر ان ڈائجسٹ کی خواتین کو الگ کرلیا جائے تو واقعی عورت وفا کی پتیلی (سوری) پتلی ہوتی ہے۔
(میں نے جمع کا صیغہ استعمال نہیں کیا)

تانیہ رحمان نے فرمایا ہے۔۔۔

بہت ہی خوب جعفر کیا بات ہے ۔ میرا پہلا تبصرہ کہاں گیا ۔ چلو کوئی نہیں ویسے ایک بات ہے خواتین پیاز الو ٹماٹر کے ساتھ ہی رہتی ہوں تو ظاہر ھے انکے افسانے یا کہانی بھی پیاز ٹماٹر سے آگے کیسے جائے گی۔ لیکن خوب لکھا ۔ یہ تو ماننے والی بات ہے۔

سعدیہ سحر نے فرمایا ہے۔۔۔

سلام جعفر
بہت اچھے ۔۔۔۔۔ ویسے پکوڑے کلر کے سوٹ پر فالودے رنگ کی چادر میں کوئ بھی قیامت لگ سکتی ھے ۔

اچھا تجزیہ ھے ویسے کونسے ڈائجسٹ پڑھتے ھو ؟؟

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

::شازل:: یار یہ کوئی اتنی سنجیدہ بحث نہیں‌ہے۔۔۔ صرف ہلگا پھلکا منورنجن ہے۔۔۔ کیا سمجھے :shock:
::تانیہ:: شکریہ۔۔۔ حالانکہ میرا اندازہ تھا کہ خواتین شاید اسے پسند نہ کریں۔۔۔ :smile:
::سعدیہ:: :grin: :grin: جی ایسے ہی ہوتا ہے۔۔ ان میں۔۔ کتھئی رنگ اور فالسہ کلر۔۔۔

فائزہ نے فرمایا ہے۔۔۔

ھمم !! کسی حد تک آپکا تجزیہ درست ہے-بہت کم رائٹرز ایسی ہیں جنکی تحریریں کوئی اچھا مقصد لئے ہوئے ہوتی ہیں۔

ڈفر نے فرمایا ہے۔۔۔

یہیں ہوں یار
غم روزگار نے فکر بلاگ سے بیگانہ کیا ہوا تھا
لیکن یہ سوچنے کے بعد کہ میں نوکری کی ٹینشن کیوں لوں؟
میں تو واپس بلاگی دنیا میں آ گیا

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

:؛فائزہ::‌ خوش آمدید۔۔۔ شکریہ۔۔۔ اگر پسند کیا ہے تو۔۔۔ :mrgreen:
::ڈفر:: یہ نوکری ووکری دل پہ مت لے یار۔۔۔ یہاں بھی یہی حال ہے ، اوپر سے پردیس ہے۔۔۔ لیکن ہم ہر غم کو ٹھٹھا مار کے اڑا دیتے ہیں۔۔۔ اللہ خیر کرے گا۔۔۔
:smile:

عمر احمد بنگش نے فرمایا ہے۔۔۔

:mrgreen: :mrgreen: :mrgreen: یار دعا کریں کہ میری پھوپھیوں‌میں‌سے کسی کے ہاتھ آپ کی یہ پوسٹ‌نہ لگ جائے، ورنہ وہی حال ہونا ہے جو میرا ہوا تھا، ایک بار ایسی کہانیوں‌کو "واہیات" کہنے پر، اب دیکھ لیں‌کہ صرف واہیات کہنے پر، ورنہ میں‌ تو کہتا ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔ چل رہنے دیں‌ورنہ یہ تبصرہ حذف کرنا پڑے گا۔
دوسری بات وہ جاسوسی اور سسپنس ڈائجسٹ‌بھی تو ہوتے ہیں، ایک نظر زرا ادھر بھی دوڑا دیں‌تو کیا بات ہے! :mrgreen:
ایک بات اور یہ ایسی پوسٹیں‌لکھ کر کیوں‌پاکستان کی 51 فیصد آبادی کو اپنا دشمن بنانے پر تلے ہیں :twisted:

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

::عمر:: گھر گھر یہی حال ہے۔۔۔ میں نے اپنے گھر والوں سے یہ پوسٹ چھپا کر رکھی ہے۔۔۔ :grin:
جاسوسی اور سسپنس ڈائجسٹ اور سب رنگ بھی۔۔۔ یہ تو میں اب تک پڑھتا ہوں۔۔۔ :mrgreen:
لیکن محی الدین نواب سے چڑ ہے۔۔۔ اس کا توا لگانے کا پورا پروگرام ہے۔۔۔
:twisted:

انکل ٹام نے فرمایا ہے۔۔۔

فرینہ کو فرنی بہت اچھا لکھا ہے

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

:؛انکل ٹام:: شکریہ۔۔۔ :smile:

حیدرآبادی نے فرمایا ہے۔۔۔

:wink:
بہت خوب !! ہمارے ہاں بھی ہندوستانی خواتین ڈائجسٹوں نے خوب پیسہ بٹورا ہے پاکستانی رسائل سے کاپی کر کر کے۔ ماحول ماحول میں فرق ہونے کے باوجود شائد کالج کی لڑکیاں احساس کمتری کو دور کرنے کے سبب ہی ایسے رسائل پڑھا کرتی ہیں۔ ویسے اب زور کچھ کم ہو گیا ہے ، وجہ شائد اردودانوں کی کمی ہے۔ کچھ رسائل بند ہو گئے ہیں۔

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

::حیدر آبادی:: ‌خوش آمدید۔۔ درست کہا آپ نے۔۔۔
امید ہے کہ آپ رونق بخشتے رہیں گے۔۔۔

ساجداقبال نے فرمایا ہے۔۔۔

ہاہاہاہاہا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جب بھی موقع ملا یہ تحریر میں ضرور اپنی بیگم اور بڑی بہن کو پڑھواؤں گا کہ وہ ڈائجسٹوں کی بڑی پجاری تھیں۔ ویسے آپس کی بات ہے گرمیوں کی لمبی دوپہریں ہم نے بھی ان ڈائجسٹوں بشمول خواتین ڈائجسٹوں کے سہارے گزاری ہیں۔
یہ کپڑوں والے رنگوں پر تو میرا بہن کے ساتھ بڑا مذاق رہتا تھا۔

جعفر نے فرمایا ہے۔۔۔

:mrgreen:
پہلی بات تو جناب یہ بتائیں کہ آپ اپنے بلاگ سے غائب ہیں۔۔۔ خیریت ہے؟؟؟
اور پسند کرنے کا شکریہ۔۔۔
میرا اس پوسٹ پر جو اپنی بہنوں سے حال ہوا ہے وہ میں جانتا ہوں یا میرا خدا جانتا ہے۔۔۔۔
:lol:

Obaid Farooq نے فرمایا ہے۔۔۔

That is a very good post. Especially the part with Shaqaq & Fajl.

خورشید آزاد نے فرمایا ہے۔۔۔

جعفر ایک عرصے بعد آپ کے بلاگ سے ایک اچھی تحریر پڑھنے کو ملی۔ ویسے اس تحریر نے پرانی یادیں تازہ کردیں۔ آپس کی بات ہےاخبارجہاں کی تین عورتیں تین کہانیاں اور جواب عرض میں کبھی کبھی شاہکار افسانے بھی پڑھنے کو ملے۔ ایسے میں میرا ان ڈائجسٹ کے لیئے دل میں نرم گوشہ ہمیشہ قائم رہے گا۔ ہاں جاسوسی ڈائجسٹ وغیرہ میں واقعی واہیات قسم کی مغرب سے نقل شدہ کہانیاں ہوتی ہیں جن کو جاسوسی قسم کی کہانیوں کے شوق میں کوشش کے باوجود پڑھ نہیں سکا۔

Anonymous نے فرمایا ہے۔۔۔

کم سے کم الفاظ میں یہ ہی عرض کیا جا سکتا ہے کہ" زبردست

@hashimraza7

تبصرہ کیجیے